April 13, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/sickbdsmcomics.com/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253

وائٹ ہاؤس کا ناولنی کی لاش اس کی ماں کے حوالے کرنے کا مطالبہ

بايدن يعزي أرملة نافالني

دو منٹread

امریکی صدرجو بائیڈن نے جمعرات کے روز کیلی فورنیا میں روسی حزب اختلاف کے جیل میں فوت ہونے والے رہ نما الیکسی ناولنی کی بیوہ اور بیٹی سے نجی طور پر ملاقات کی۔

ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ بائیڈن نے سان فرانسسکو میں یولیا اور دشا نوالنایا سے ملاقات کی اور ناولنی کی پراسرار موت پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے دونوں ماں بیٹی سےتعزیت کی۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ بائیڈن نے جمعہ کو روس کے خلاف نئی پابندیوں کے اعلان کا اعادہ کیا۔

بائیڈن اور ناوالنی کی بیوہ کے درمیان ملاقات کا منظر

بائیڈن اور ناوالنی کی بیوہ کے درمیان ملاقات کا منظر

بائیڈن جو منگل سے کیلیفورنیا میں انتخابی مہم چلا رہے ہیں نے روسی اپوزیشن رہ نما آنجہانی الیکسی ناولنی کی “غیر معمولی ہمت کی تعریف” کے ساتھ ساتھ “بدعنوانی کے خلاف اور ایک آزاد اور جمہوری روس کے لیے ان کی جدوجہد” کو سرہا۔

ناولنی کی کی بیٹی داشا ناولنایا کیلیفورنیا کی سٹینفورڈ یونیورسٹی کی طالبہ ہے۔

وائٹ ہاؤس کے ایک بیان کے مطابق 81 سالہ ڈیموکریٹک صدر نے اس بات پر زور دیا کہ الیکسی ناوالنی کی آزادی، جمہوریت اور انسانی حقوق کے لیےکوششوں کو آگے بڑھایا جائےگا۔

وائٹ ہاؤس نے اس ملاقات کی دو تصاویر شائع کی ہیں، جن میں سے ایک تصویر میں بائیڈن کو یولیا نوالنایا کو گلے لگاتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔ دوسری تصویر میں امریکی صدر کو دونوں خواتین سے گفتگو کرتے دکھایا گیا ہے۔

وائٹ ہاؤس نے جمعرات کو زو دیا تھا کہ روسی حکام کو ناوالنی کی لاش اس کی والدہ کے حوالے کرنی چاہیے۔

قومی سلامتی کونسل کے ترجمان جان کربی نے واشنگٹن میں صحافیوں کو بتایاکہ “روسیوں کو اس کے بیٹے کو اس کے پاس واپس کرنا چاہیے تاکہ ناولنی کی والدہ اپنے بیٹے کی اس کی ہمت اور اپنے ملک کے لیے اس کی خدمات کو مناسب طریقے سے یاد کر سکیں”۔

خیال رہے کہ الیکسی ناولنی گذشتہ دنوں روس کی ایک جیل میں پراسرار طور پر ہلاک ہوگئے تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *